23 dead in Azad Kashmir bus plunge

The accident occurred at Nausehri, approximately 45km north of Muzaffarabad near India
The accident occurred at Nausehri, approximately 45km north of Muzaffarabad near India

MUZAFFARABAD – At least 23 people were killed when a minibus plunged from a mountain road into a river in a remote area of Azad Kashmir late Friday, officials said.

The accident took place at Nausehri, some 45 kilometres north of Muzaffarabad, when the minibus driver lost control.

The vehicle veered off a road, falling 100 metres into the gushing river, local government and rescue officials said.

“More than 23 people were killed and three others wounded in the bus accident,” local government official Ashfaq Gilani told AFP.

“We have only found three bodies and three wounded people. More than 20 other passengers and the wreckage of the bus have been swept away by the river,” he added.

“We have presumed them dead as there is no chance of their survival,” Gilani said.

Rescuers said the terrain was difficult and that they would resume the search for the remainder of the passengers at dawn on Saturday.

Pakistan has one of the world’s worst records for fatal traffic accidents, blamed on poor roads, badly maintained vehicles and reckless driving.

کیل سے مظفراباد جانے والی مسافر کوسٹر میں ٹوٹل چوبیس کے قریب افراد سوار تھے جن میں ڈراءیور فیصل ساکن چلہانہ، سرفراز ولد عبداللہ ساکن اڑنگ کیل، زاہد ولد عبداللہ ساکن اڑنگ کیل،شبیر احمد ولد ولی احمد ساکن کیل، ان کے ہمراء خاندان کے تین افراد کے نام معلوم نہیں ہوسکےراشد محمود ولد خاقان ساکن کیل، ان کے ہمراء خاندان کے دو دیگر افراد کے نام معلوم نہیں ہوسکے محمد نسیم ولد ساءیں محمد ساکن جھنڈ گراں مظفرآباد، سید الطاف شاہ ولد سید نور شاہ ساکن نیلم صدیق ولد محمد شریف ساکن لاہور کینٹ ان کے دو بھاءیوں کے نام معلوم نہیں ہوسکے،مہر النساء زوجہ محبوب الیِ شاہ، سید صغیر شاہ ولد مھبوب الیِ شاہ، سید شفقت شاہ ولد محبوب الیِ شاہ ساکنان صندوک سیداں ، رویس احمد ولد امر علی ساکن سیماری، کنڈیکٹر رویس ولد قدیر ساکن دودھنیال گہوری شامل ہیں حادثہ میں تین افراد جن میں کنڈیکٹر رویس احمد جو کہ معجزانہ طور پر چھلانگ لگا کر بچ گیا، سرفراز ولد عبداللہ، اور صدیق ولد شریف ساکن لاہور زخمی ہوءے ہیں بقیہ ۲۲ افراد جاں بحق ہوءے ہیں جن میں سے دو خواتین کی لاشیں ملی ہیں بقیہ لاشیں اور گاڑی دریاءے نیلم کی گہری کھاءی میں ہیں رات گے تو امدادی کاروایوں کا سلسلہ جاری ہے کشتی کی مدد سے رات کو لاشوں کی تلاش کی جارہی ہے لیکن کامیابی کے امکانات نظر نہیں آءے جاءے حادثہ کا معاءنہ کیا اور امدادی سرگرمیوں کو دیکھا مشاہدے کے مطابق گاڑی کی تیز رفتاری میں بریک فہل ہوءی ڈراءیور نے گاڑی اور مسافروں کو بچانے کی آخری حد تک کوشش کی ڈراءیور نے گاڑی کو سڑک کنارے پہاڑی میں مار کر رفتار کم کرنے کی کوشش کی لیکن کامیابی نہ مل سکی گاڑی سینکڑوں فٹ گہری دریاءے نیلم میں نیلم جہلم پراجیکٹ کے ڈیم میں جاگری

رپورٹ محمد ندیم شاہین مہناس